Stage set for Sindh opposition protest against Local Govt law

Like this? Please Spread The Word By Sharing.


کراچی: سندھ کی اپوزیشن جماعتیں آج صوبے میں متنازع بلدیاتی قانون اور حد بندیوں کے خلاف احتجاج کریں گی۔، اے آر وائی نیوز نے ہفتہ کو رپورٹ کیا۔

ذرائع نے بتایا کہ ایم کیو ایم پی کی جانب سے فوارہ چوک پر ہونے والے احتجاج کی تیاریوں کو حتمی شکل دے دی گئی ہے۔

جس میں سندھ کی اپوزیشن جماعتوں کے رہنما بھی شامل ہیں۔ پی ٹی آئی اور جی ڈی اے احتجاجی ریلی میں شرکت کرے گا۔ جلسے سے خالد مقبول صدیقی، علی زیدی، سردار عبدالرحیم اور اپوزیشن جماعتوں کے دیگر رہنما خطاب کریں گے۔

احتجاج میں سندھ لوکل گورنمنٹ (ترمیمی) ایکٹ کے خلاف متفقہ قرارداد بھی پیش کی جائے گی۔

ذرائع نے بتایا کہ اپوزیشن جماعتیں ریلی میں وزیر اعلیٰ ہاؤس جانے سمیت اپنے احتجاج کے آپشنز کا بھی اعلان کریں گی۔

ذرائع کے مطابق ایم کیو ایم نے اپنے کارکنوں کو قانون کے خلاف احتجاج کا پلان دے دیا ہے۔

دوسری جانب جماعت اسلامی نے سندھ لوکل گورنمنٹ (ترمیمی) ایکٹ کے خلاف سندھ اسمبلی کے سامنے دھرنا دیا۔

جماعت اسلامی نے بھی بلدیاتی قانون کو سندھ ہائی کورٹ (ایس ایچ سی) میں چیلنج کردیا ہے۔ درخواست جماعت اسلامی کراچی کے سربراہ حافظ نعیم الرحمان نے دائر کی تھی۔

ہائیکورٹ نے پیپلز پارٹی کی زیرقیادت سندھ حکومت کو کیس کی آئندہ سماعت پر جواب جمع کرانے کا حکم دے دیا۔

درخواست گزار نے استدعا کی کہ یہ بل – جو 11 دسمبر 2021 کو منظور کیا گیا تھا – “غیر قانونی اور آئین کے آرٹیکل 140A کی خلاف ورزی” تھا۔

حافظ نعیم درخواست میں سندھ ہائی کورٹ سے بل میں نئی ​​ترامیم کو غیر آئینی اور کالعدم قرار دینے کی استدعا کی گئی۔

تبصرے

.

Like this? Please Spread The Word By Sharing.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com
Live Updates COVID-19 CASES