ECP issued notice on pleas challenging PHC order against non-party polls

Like this? Please Spread The Word By Sharing.


اسلام آباد: سپریم کورٹ نے جمعرات کو الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کو نوٹس جاری کرتے ہوئے پشاور ہائی کورٹ (پی ایچ سی) کے 2 نومبر کے آئندہ بلدیاتی انتخابات غیر جماعتی بنیادوں پر کرانے کے حکم کو چیلنج کیا ہے۔

جسٹس عمر عطا بندیال کی سربراہی میں عدالت عظمیٰ کے دو رکنی بینچ نے خیبرپختونخوا کے ایڈووکیٹ جنرل اور دیگر فریقین کو اس معاملے میں عدالت کی مدد کرنے کی ہدایت کی۔

جسٹس بندیال نے ریمارکس دیے کہ کیس میں فریقین کا تعلق سیاسی جماعتوں سے ہے۔ انہوں نے نشاندہی کی کہ خوشدل خان کے پی اسمبلی کے رکن ہیں جبکہ کامران مرتضیٰ سینیٹر ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: ای سی پی نے کے پی کے اضلاع میں اپیلٹ ٹربیونلز تشکیل دیئے۔

انہوں نے فریقین سے مطالبہ کیا کہ وہ غیر جانبدار رہتے ہوئے معاملے کا فیصلہ کرنے میں عدالت کی مدد کریں۔ انہوں نے کہا کہ ان کا مقصد منصفانہ اور شفاف انتخابات کو یقینی بنانا ہونا چاہیے۔ عدالت نے کیس کی سماعت 30 نومبر تک ملتوی کرتے ہوئے مزید ہدایت کی کہ کیس تین رکنی بینچ کے سامنے طے کیا جائے۔

2 نومبر کو پشاور ہائی کورٹ (پی ایچ سی) نے غیر جماعتی بنیادوں پر بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کو غیر آئینی قرار دے دیا۔ ہائی کورٹ کے ایک بینچ نے خیبرپختونخوا کے بلدیاتی انتخابات سے متعلق مختلف یکساں درخواستوں پر اپنا مختصر فیصلہ سنایا۔

یہ بھی پڑھیں: کے پی میں بلدیاتی انتخابات شیڈول کے مطابق ہوں گے: ای سی پی

عدالت نے الیکشن کمیشن کو حکم دیا کہ ویلج اور محلہ کونسلز کے انتخابات جماعتی بنیادوں پر کرائے جائیں اور پارٹی بنیادوں پر انتخابات کے لیے ضروری اقدامات کیے جائیں۔

فیس بک نوٹس برائے یورپی یونین!
FB تبصرے دیکھنے اور پوسٹ کرنے کے لیے آپ کو لاگ ان کرنا ہوگا!



Like this? Please Spread The Word By Sharing.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com
Live Updates COVID-19 CASES