JI announces rally at D-Chowk against inflation

Like this? Please Spread The Word By Sharing.


اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق نے 31 اکتوبر کو اسلام آباد کے ڈی چوک پر عوامی جلسہ کرنے کا اعلان کیا ہے۔

اسلام آباد میں مرکزی یوتھ بورڈ سے خطاب کرتے ہوئے ، جماعت اسلامی کے سربراہ نے پٹرول اور بجلی کی قیمتوں میں حالیہ اضافے کو مسترد کرتے ہوئے وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کے ساتھ طے پانے والے معاہدے کو عام کرے۔

انہوں نے کہا کہ ہم پٹرولیم مصنوعات اور بجلی کے نرخوں میں اضافے کو مسترد کرتے ہیں۔

سراج الحق نے کہا کہ تمام بڑے اور چھوٹے شہروں میں احتجاجی مظاہرے کیے جائیں گے۔ انہوں نے تمام شعبہ ہائے زندگی سے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ “کرپٹ اور نااہل حکمران اشرافیہ” سے نجات کے لیے جماعت اسلامی کی تحریک کا حصہ بنیں۔

مزید پڑھ: پی ڈی ایم نے افراط زر کے خلاف ملک بھر میں پناہ گزینوں کا اعلان کیا

انہوں نے مزید کہا کہ جماعت اسلامی 31 اکتوبر کو ڈی چوک جلسے میں اپنی اگلی حکمت عملی کا اعلان کرے گی۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (PDM) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے اتوار کو بڑھتی ہوئی مہنگائی اور ناقص معاشی پالیسیوں کے خلاف ملک گیر احتجاج کا اعلان کیا ہے۔

جے یو آئی (ف) کے سربراہ نے ہفتہ کو یہاں اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے یہ بیان دیا۔

پی ڈی ایم کے سربراہ نے کہا کہ حکومت کو بے دخل کرنے کا وقت آگیا ہے اور عوام سے بڑھتی ہوئی مہنگائی اور بے روزگاری کے خلاف سڑکوں پر آنے کی درخواست کی ہے۔

پڑھیں: پی پی پی نے انفلیشن کے خلاف سٹریٹس کو ہٹ کرنے کا اعلان کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پی ڈی ایم کا ایک اجلاس کل (پیر) اسلام آباد میں منعقد ہوگا جس میں لانگ مارچ اور احتجاجی مظاہروں کے حوالے سے اہم فیصلے کیے جائیں گے۔

چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی۔ بلاول بھٹو زرداری ملک میں بڑھتی ہوئی مہنگائی کے خلاف سڑکوں پر نکلنے کا اعلان کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ پارٹی ملک میں اگلی حکومت بنائے گی۔

یورپی یونین کے لیے فیس بک نوٹس!
ایف بی تبصرے دیکھنے اور پوسٹ کرنے کے لیے آپ کو لاگ ان کرنے کی ضرورت ہے!



Like this? Please Spread The Word By Sharing.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com
Live Updates COVID-19 CASES