NA-249 by-poll: PML-N’s Miftah, Zubair express concerns over ‘slow pace’ of vote count

Like this? Please Spread The Word By Sharing.


کراچی: ووٹوں کی گنتی کی مبینہ سست رفتار پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ، این اے 249 کراچی میں ہونے والے ضمنی انتخاب کے لئے پاکستان مسلم لیگ نواز کے مسلم لیگ (ن) کے امیدوار مفتاح اسماعیل نے الزام عائد کیا کہ دو پولنگ افسران نے فارم 45 کی کاپیاں فراہم نہیں کیں۔ اے آر وائی نیوز نے اطلاع دی ، پولنگ ایجنٹوں کو۔

تفصیلات کے مطابق ، مسلم لیگ (ن) کے محمد زبیر اور مفتاح اسماعیل دیر رات ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسر (ڈی آر او) کے دفتر پہنچے۔ ان کا موقف تھا کہ جب تک انہیں متعلقہ فارم فراہم نہیں کیا جاتا ہے وہ دفتر سے باہر نہیں جائیں گے۔

صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے مفتاح اسماعیل نے بتایا کہ پولنگ اسٹیشن نمبر 260 اور 261 کے فارم 45 سے متعلقہ دفتر میں جمع نہیں کرایا گیا۔ انہوں نے اشارہ کیا کہ پولنگ افسران نتائج پیش کیے بغیر ہی دفتر سے چلے گئے اور ان کے موبائل فون بھی بند ہیں۔

مزید پڑھ: غیر سرکاری نتائج: این اے 249 کراچی کے ضمنی انتخاب میں مسلم لیگ (ن) کی رائے شماری جاری ہے

اس سے قبل آج قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 249- کراچی ویسٹ II کے ضمنی انتخاب کے لئے پولنگ اختتام پذیر ہوگئی جس کے نتائج آنا شروع ہوگئے۔

پولنگ صبح آٹھ بجے شروع ہوئی تھی اور شام پانچ بجے تک بغیر کسی وقفے کے جاری رہی۔ ضمنی انتخاب کے باعث سندھ حکومت نے حلقہ این اے 249 کراچی میں (جمعرات کو) عام تعطیل کا اعلان کیا تھا۔

غیر سرکاری نتائج

72 پولنگ اسٹیشنوں کے غیر سرکاری اور غیر مصدقہ نتائج کے مطابق ، مسلم لیگ (ن) کی مفتاح اسماعیل نے پیپلز پارٹی کے قادر مندوخیل کے خلاف 6،324 ووٹ لے کر آگے ہیں جنہوں نے 4123 ووٹ حاصل کیے۔

تاہم ، پی ایس پی امیدوار مصطفیٰ کمال نے 2734 ووٹ حاصل کیے ، ٹی ایل پی کے مفتی نذیر نے 2427 ووٹ حاصل کیے ، پی ٹی آئی کے امیدوار امجد آفریدی نے 1445 اور ایم کیو ایم کے حافظ مرسلین نے 1323 ووٹ حاصل کیے ، 273 میں سے 72 پولنگ اسٹیشنوں کے غیر سرکاری نتائج کے مطابق۔

تبصرے

تبصرے



Like this? Please Spread The Word By Sharing.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com
Live Updates COVID-19 CASES